این بی ایف ’’امن انقلاب بذریعہ کتاب‘‘ کی منزل کی طرف رواں دواں ہے: ڈاکٹر انعام الحق جاوید
نیشنل بُک فاؤنڈیشن مین منفرد نوعیت کی تاریخی سنگل سٹون بُک کا افتتاح اور تقریب ، اہلِ قلم کی شرکت

stone bookاسلام آباد (19نومبر2015ء) نیشنل بُک فاؤنڈیشن ایک عظیم مقصد کے ساتھ فروغِ کتب بینی کے لیے جتنی جہات میں کاوشیں کر رہا ہے، وہ قابلِ تحسین ہیں۔ این بی ایف جدید ٹیکنالوجی کے چیلنجوں کے باجود عوام الناس کو کتاب کی طرف بُلانے اور عاداتِ مطالعہ کو فروغ دینے میں مصروف ہے۔ کتاب فرد کی سوچ بدلتی ہے اور اس کی شخصیت کی تشکیل کرتی ہے۔ بغیر کتاب کوئی کمرہ یا گھر ایسے ہے جیسے روح کے بغیر جسم۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعظم پاکستان کے قومی امور کے مشیر اور نامور کالم نگار دانش ور عرفان صدیقی نے نیشنل بُک فاؤنڈیشن میں تاریخی نوعیت کی منفرد سنگل سٹون بُک(یک سنگی کتاب) کی افتتاحی تقریب میں شرکاء سے خطاب میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ این بی ایف کے سربراہ خود ایک علمی وادبی شخصیت ہیں اور ان کی یہاں موجودگی اس اہم ادارے کے لیے قابلِ فخر ہے۔ تقریب کی نظامت ملک فدا ء الرحمان نے کی۔

stone book1این بی ایف کے مینیجنگ ڈائریکٹرڈاکٹر انعام الحق جاوید نے ابتدائی کلمات میں مہمانِ خصوصی عرفان صدیقی اور بڑی تعداد میں جڑواں شہروں کے اہلِ قلم، مصنفین اور علمی وادبی شخصیات کی آمد پر ان کا شکریہ ادا کیا اور این بی ایف کی گزشتہ ایک برس کی کارکردگی کا اجمالی جائزہ پیش کرتے ہوئے علمی و اشاعتی سفر کے بارے میں آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج این بی ایف ملک کی سب سے بڑی بُک انڈسٹری بن چکی ہے۔ ہم این بی ایف انقلاب بذریعہ کتاب کی منزل کی جانب رواں دواں ہے۔نئے منصوبوں کے بعدتین سو سے زائد متنوع موضوعات کی مفید، معلوماتی، معیاری اور کم قیمت کتب کی اشاعت بہت بڑی پیش رفت ہے۔انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں قومی کتاب میلے سمیت ، کوئٹہ میں آزادی کتاب میلہ، کراچی میں شہرِ کتاب کا آغاز اور فروغِ کتب بینی کے لیے متعدد منصوبوں پر تیزی سے عمل ہو رہا ہے۔ کتاب میلوں میں قارئین کا کروڑوں روپے کی کتب کا خرید کر پڑھنا ایک بڑی کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’ہر ہاتھ میں کتاب ‘‘ ہمارا نعرہ بھی ہے ا ور مقصد بھی۔stone book2قبلِ ازیں تقریب کے چیف گیسٹ عرفان صدیقی کی این بی ایف آمد پر مینیجنگ ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے اُن کا استقبال کیا۔ پروگرام کے مطابق چیف گیسٹ نے سنگل سٹون بُک (یک سنگی کتاب) کی نقاب کشائی کی۔ اس موقع پر انہوں نے ریڈرز بُک کلب کی ممبر شپ بھی حاصل کی جس کے تحت ہر ممبر کو 55فیصد رعایت دی جاتی ہے۔ معزز مہمان کو ہزاروں کتابوں سے آراستہ بُک شاپ، ٹیکسٹ بکس کارنر، نیشنل بُک پارک، بُک وال کلاک، مائی بُک شیلف اور این بی ایف کے نیشنل بُک میوزیم کا وزٹ کرایاگیا۔ چیف گیسٹ نے بُک شاپ میں این بی ایف کے زیر اہتمام شائع کیے گئے قرآن پاک کے معیاری نسخے کی تعریف کی اور بُک میوزیم میں قرآن گیلری میں شامل نادرو نایاب اور تاریخی قرآنِ پاک کی ستائش کی۔