3اسلام آباد ( 24مارچ 2015)اس وقت معاشرہ جس عدم استحکام کا شکار ہو رہا ہے، کتاب اور عاداتِ مطالعہ کے فروغ سے معاشرے میں استحکام بڑھے گا اور ہم آہنگی کی فضا قائم ہو گی۔ نیشنل بُک فاؤنڈیشن کتب بینی کو جس وسیع پیمانے پر فروغ دے رہا ہے ، وہ قابلِ تحسین ہے، اس سے مثبت نتائج مرتب ہوں گے۔ ریڈرز بُک کلب ایک بہترین سکیم ہے، یہ سندھ بھر کے طالب علموں کے لیے ایک تحفہ ہے۔ ان خیالات کا اظہار سندھ کے وزیر تعلیم نثار احمد کھوڑو نے کراچی میں نیشنل بُک فاؤنڈیشن کی نئی بُک شاپ کی پُر وقار افتتاحی تقریب کے شرکاء سے چیف گیسٹ کی حیثیت میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے این بی ایف اور اس کے مینیجنگ ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹر انعام الحق جاوید کو مبارک باد دی اور فروغ کتب کے لیے اُن کی مساعی اور منصوبوں کی تعریف کی۔ مہمانِ خصوصی نے کہا کہ ہمیں کتابوں اور لائبریریوں کو تحفظ اور فروغ دینا ہے تاکہ کتاب کی جستجو مزید بڑھے۔صدرِ تقریب اور ضیاء الدین یونیورسٹی کے وائس چانسلر پیرزادہ قاسم نے این بی ایف کی کا کردگی کو بہترین قرار دیتے ہوئے کہا کہ کتاب ، فرد اور معاشرہ دونوں کا حُسن ہے اس سے مجموعی سماجی وقار بڑھتا ہے انہوں نے کہا کہ آج پوری دُنیا میں نالج کی کرنسی چل رہی ہے۔

unnamed نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے مینیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹرانعام الحق جاوید نے خطبۂ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ’’بُک ریوولوشن ‘‘ این بی ایف کے مقاصد کا حصّہ ہے، انقلاب بذریعہ کتاب ہماری منزل ہے۔ ملک بھر میں 23آؤٹ لیٹس بُک کلچر کے فروغ میں کردار ادا کر رہے ہیں۔ایم ڈی نے بتایا کہ پچھلے برس این بی ایف کی کتب کی سیل ساڑھے چوبیس کروڑ روپے تھی جو اس سال بڑھ کر 27کروڑ روپے ہو گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریڈرز کلب سکیم معیاری اور ارزاں قیمت کتب تک عوامی رسائی میں پُل کا کام کر رہی ہے۔ اگلے ماہ 22اپریل سے پانچ روزہ چھٹا قومی کتاب میلہ ان کوششوں کا نقطۂ عروج ہو گا۔ ایم ڈی نے چیف گیسٹ اور دیگر تمام معززینِ شہر کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ’’ شہر کتاب ‘‘ کے عنوان سے این بی ایف کے زیر اہتمام ہفتہ وار بُک فیئرز کا انعقاد کیا جائے گا۔این بی ایف نے اس سال 126سے زائد معیاری کتب کی اشاعت کی جن میں سے بھر پور پذیرائی کے بعد 20کتب کے دوسرے اور تیسرے ایڈیشنز شائع ہوئے۔ تقریب سے کالم نگار محترمہ زاہدہ حنا ، ڈاکٹر فاطمہ حسن اور پروفیسر انوار احمد زئی نے بھی خطاب کیا اور این بی ایف کی کامیابیوں پر ایم ڈی کو مبارک باد دی جب کہ تقریب کی نظامت اجمل سراج نے کی۔ تقریب کے کامیاب انعقاد میں این بی ایف کراچی کے چیف کو آرڈی نیٹر سُلطان خلیل نے نمایاں کردار ادا کیا۔ محسن ناریجو اور ان کی ٹیم کی کوششوں کو بھی سراہا گیا۔