unnamed (5)اسلام آباد(28اپریل 2015ء) نیشنل بک فاؤنڈیشن ہر شعبے جس تیزی کے ساتھ ترقی کرتا ہوا آگے بڑھ رہ اہے ، اس کی روشنی میں اب یہ ایک مثالی ادارے کے حیثیت اختیار کر چکا ہے ، بُک شاپس میں لیجنڈ لکھاریوں کے گوشے خوب ہیں اور نیشنل بک میوزیم خاصے کی چیز ہے ان خیالات کا اظہار نامور ناول نگار اور این بی ایف کے سینئر بک ایمبسیڈر انتظار حسین نے نیشنل بک فاؤنڈیشن کے دورے کے موقع پر کیا۔ اُن کے ہمراہ امریکہ سے آئی ہوئی این بی ایف کی بک ایمبسیڈر ڈاکٹر سائرہ علوی بھی تھیں۔ انتظار حسین کی آمد پر ایم ڈی این بی ایف ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے اُن کا خیر مقدم کیا، اُنہیں این بی ایف کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی ، مختلف شعبے دکھائے اور بتایا کہ پچھلے ایک سال میں این بی ایف کی شاپس پر 30کروڑ روپے سے زائد کی کتب فروخت ہوئیں ۔ انہوں نے معزز مہمانوں کو یہ بھی بتایا کہ چند روز قبل پانچ روزہ نیشنل بک میلے میں بک سٹالوں پر تین کروڑ روپے سے زائد کی کتب فروخت ہوئیں۔ انتظار حسین نے ان کاوشوں اور اقدامات کو سراہا اور تاثرات میں لکھا کہ نیشنل بک فاؤنڈیشن درست سمت میں آگے بڑ ھ رہا ہے ۔ انتظار حسین نے عالمی معیار کے مطابق شائع کی گئی پہلی سے بارہویں جماعت تک کی کتب کو بھی سراہا۔ ڈاکٹر سائرہ علوی نے خوشگوار حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہ کہا پچھلے برس جب میں امریکہ سے یہاں آئی تھی تب سے اب تک این بی ایف کے ہر شعبے میں بہت بڑی تبدیلی نظر آئی ہے۔