unnamed (4)اسلام آباد (۲۴ اپریل ۲۰۱۵) پاکستانی زبانیں قومی یکجہتی اور یگانگت کی خوشبو بکھیرتی ہیں۔ ملک کے تمام صوبوں اور علاقوں کے رائٹرز اپنے اپنے کلچر اور زبان و ادب میں اچھی تخلیقات منظر عام پر لا رہے ہیں۔ یہ باتیں نامور ماہرِ تعلیم اور علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے این بی ایف کے بُک میلے میں پاکستانی زبانیں کے موضوع پر ایک خصوصی پروگرام میں صدارت کرتے ہوئے کیں۔ مہمانِ خصوصی اکادمی ادبیات کے چیئرمین ڈاکٹر قاسم بگھیو نے کہا کہ این بی ایف میلے میں ملک بھر سے آئے ہوئے مندوبین کی شمولیت سے رونقوں میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی زبانوں کی اہمیت سے کسی کو انکار نہیں کیونکہ زبانیں باہمی محبت کو فروغ دیتی ہیں۔ ایم ڈی این بی ایف ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے معزز مہمانوں کو خوش آمدید کہا۔ انہوں نے بتایا کہ نیشنل بُک فاؤنڈیشن پاکستانی زبانوں کو اہمیت دیتا ہے اور ہر صوبے کی زبان میں کتب شائع کی جا رہی ہیں۔ اس نشست کے کوآرڈی نیٹر ڈاکٹر عبدالواجد تبسم تھے جب کہ نظام کے فرائض سعدیہ کمال نے انجام دیئے۔ دیگر صوبوں سے ہیروارث شاہ پر احسان اللہ طاہر، بُلھے شاہ پر ڈاکٹر امجد بھٹی ، مست توکلی پر ڈاکٹر واحد بخش بزدار، شاہ لطیف بھٹائی پر ڈاکٹر فاطمہ حسن اور رحمان بابا پر ناصر علی سیّد نے گفتگو کی اور ان کا منتخب اوریجنل کلام اُردو ترجمے کے ساتھ پیش کیا۔ بُک ریڈنگ میں نذیر تبسم اور مونس ایاز شیخ نے شرکت کی۔