unnamed (1)(اسلام آباد 25 اپریل 2015)نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام منعقدہونے والا گرینڈ بُک فیئر ملک کی تاریخ کا سب سے بڑا بُک میلہ ہے ۔ اس کتاب میلے نے کتاب اور امن سے محبت کے آفاقی پیغام کو گھر گھر پہنچایاہے۔پاکستان کے اہلِ قلم اور علمی و ادبی شخصیات اس ملک کا سب سے بڑا اور قیمتی اثاثہ ہیں۔اسلام آباد جسے شہرِ خموشاں سے تعبیر کیا جاتاتھا اور فائلوں کا شہر کہلاتا تھا اب علم و ادب کی ان نامور شخصیات کی وجہ سے امن ، محبت، اخوت اور روشن مستقبل کی نشاندہی کرنے والا شہر کہلانے لگا ہے۔ یہ باتیں این بی ایف کے چھٹے قومی کتاب میلے کی اختتامی تقریب میں وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات وقومی ورثہ سینیٹر پرویز رشید نے چیف گیسٹ کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کہیں ۔چیف گیسٹ نے نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے مینیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر انعام الحق جاوید کو ایک کامیاب کتاب میلہ منعقد کرنے پر مبارکباد دی ۔ قبل ازیں چیف گیسٹ سینیٹر پرویز رشید پاک چائنا فرینڈ شپ سنٹر پہنچے تو این بی ایف کے ایم ڈی ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے ان کا خیر مقدم کیا ۔اس موقع پر بُک پریڈ اور بینڈ شو پیش کیا گیا۔ایم ڈی این بی ایف نے اظہارِ تشکر کرتے ہوئے وفاقی وزیراطلاعات سینیٹر پرویز رشید کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ انہوں نے افتتاحی تقریب کے بعد بُک میلے کے اختتامی ا جلاس کے لیے بھی آج اپنا قیمتی وقت نکالا۔انہوں نے کہا کہ این بی ایف اپنے مشن کی سمت مسلسل گامزن ہے۔ انہوں نے کتاب میلے میں ملک بھر سے اور بیرون ملک سے آئے ہوئے تمام معزز شرکاء کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ہم اس میلے کے ذریعے اپنے مقاصد حاصل کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔ہمارا یہ سفر جاری ہے۔ تقریب کا آغاز قاری بزرگ شاہ الازہری کی تلاوت سے ہوا۔ نظامت کے فرائض عمار مسعود نے ادا کیے۔ تقریب میں این بی ایف کے تمام بُک ایمبیسیڈرز کی نمائندگی کرتے ہوئے سید تابش الوری نے کہا کہ یہ نظریہ قطعاً غلط ہے کہ بُک ریڈنگ میں کمی آرہی ہے بلکہ حقیقت یہ ہے کہ نوجوان نسل کتاب سے زیادہ جڑی ہوئی ہے ۔ انہوں نے نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے سربراہ کو اس قدر کامیاب بُک فیئر منعقد کرنے پر مبارکباد دی۔ GSIS سکول کی پرنسپل قراۃ العین علی رضوی نے اپنے تاثرات میں کہا کہ یہ میلہ بچوں کے حوا لے سے ایک بہترین ایکٹویٹی ہے اور اب کتاب سے رغبت کے حوالے سے بہت بڑی تبدیلی نظر آ رہی ہے۔ روٹس سکول کے چیف ایگزیکٹو فیصل مشتاق نے کہا کہ این بی ایف کے اس بُک فیئر نے طلبہ کو کتاب کے قریب کیا اور ان کے دل میں کتاب کی اہمیت کو اُجاگر کیا۔
اختتامی تقریب میں کچھ خصوصی ایوارڈز بھی دئیے گئے ۔ایوارڈ پانے والوں میں آغا نثار اور اجمل سراج شامل تھے جنہیں50، 50 ہزار روپے کے نقد انعامات دیئے گئے۔آفاق کے زیرِ اہتمام اس میلے میں 500 سے زائد طلبہ اور طالبات میں ہونے والے کوئز مقابلے میں رمشا بی بی، زُنیر احمد، ملائکہ زاہد، علیزہ مبین، بسمہ آغا، سیدہ ایمان علی اور عائشہ اسد نے انعامات وصول کیے۔نگار نذر نے اپنی پپٹ گوگی کے ہمراہ چیف گیسٹ کو تحفہ پیش کیا۔