کئی کتب کی رونمائی ، بچوں کی کتب زیادہ فروخت ہوئیں، اسکولوں کی بھی شرکت 5لاکھ سے زائد افراد شریک ہوئے ، کراچی کتاب دوست شہر ہے ، ایونٹ انتظامیہ

کراچی۔  گیارہواں عالمی کتب میلہ پیر کی شام ختم ہوگیا،پاکستان کے سب سے بڑے کتب میلے نے اس سال بھی کامیابی کے ریکارڈ قائم کیے ۔ پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن اور نیشنل بک فاؤنڈیشن کی جانب سے منعقدہ یہ کتب میلہ 5روز جاری رہا۔ منتظمین کے مطابق اس بار بھی ان کی توقعات سے بڑھ کر عوام کی دلچسپی دیکھنے میں آئی اور پانچ لاکھ سے زائد افراد نے شرکت کرکے یہ ثابت کردیا کہ کتابیں انسان کی بہترین دوست ہیں ،پری اور پرائمری اسکولوں کے نصاب کی فروخت کے تمام سابقہ ریکارڈ ٹوٹ گئے ہیں۔کئی پبلشرز کی جانب سے نئی کتب کی تقریب رونمائی ہوئی۔ بہترین انتظامات پر منتظمین کو خراج تحسین بھی پیش کیاگیا۔نجی اسکولوں کے بچوں کے علاوہ والدین نے بھی اس میلے میں گہری دلچسپی ظاہر کی۔ انگریزی ، اردو حروف تہجی،بنیادی ریاضی اور رنگو ں، جانوروں اور پرندوں کی پہچان کے حوالے سے نثر اور نظموں کی تیار کی گئی کتابوں کی بڑے پیمانے پر فروخت دیکھنے میں آئی۔میلے میں پاکستان کے علاوہ آٹھ ممالک کے پبلشرز نے شرکت کی۔ میلہ کے پانچویں روز مختلف پبلشرز نے پروگرام کا انعقاد کیا آخری روز بھی درجنوں اسکولوں اور کالجوں کے طلبا نے کتابیں خریدیں۔ چیئرمین عزیز خالد اور کنوینر اویس مرزا جمیل نے پانچوں دن آنے والے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔میلے کے کوآرڈی نیٹر شیخ عالمگیر کے مطابق پچھلے برسوں کی طرح اس برس بھی لاکھوں روپے کی کتابوں کی خریداری ہوئی اور اس سال بھی پانچوں روز بہت زیادہ رش دیکھنے میں آیا۔