dr inamاسلام آباد (19اکتوبر2015ء)نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے مینیجنگ ڈائریکٹر ڈاکٹر انعم الحق جاوید نے کہا ہے کہ بڑی تعداد میں کتب کی اشاعت اس بات کا ثبوت ہے کہ ملک میں کتب بینی کا کلچر پروان چڑھ رہا ہے اور گزشتہ چند برسوں سے پھیلایا جانے والا یہ تاثر بے بنیاد ہے کہ ملک میں کتاب کلچر تنزلی کا شکار ہے۔ این بی ایف کے زیر اہتمام اسلام آباد کوئٹہ اور کراچی میں قومی کتب میلوں میں کروڑں روپے کی کتب فروخت ہونا ایک بہت حوصلہ افزا پہلو ہے۔ اس طرح مجموعی طور پر ملک میں بُک ریڈنگ میں کمی نہیں بلکہ مسلسل اضافہ ہوا ہے۔ بڑی اہم بات یہ ہے کہ این بی ایف کی معیاری اور نہایت ارزاں قیمت کتابوں کی طرف طلبہ اور نئی نسل تیزی سے راغب ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ این بی ایف نے پبلشر کی طرف سے رائٹر کے استحصال کا راستہ روکا ہے اور لکھاری کے احترام میں اضافہ کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کتاب کلچر میں تنزلی کے پراپیگنڈے کو زائل کرنے کے لیے نیشنل بُک فاؤنڈیشن متعدد اقدامات اٹھا رہا ہے اور کتب بینوں کے لیے پر سکون اور علمی ماحول فراہم کیا گیا ہے تا کہ لوگ کلب بُک شاپ، نیشنل بُک میوزیم، موبائل بُک کلب اور دیگر کارنرز سے اپنی پسند کی ہر طرح کی کتابیں تلاش کر سکیں۔