DSC_0326اسلام آباد (6اکتوبر 2015ء) کتب بینی کے فروغ اور طلبہ واساتذہ کو مفید و معلوماتی اور کم قیمت کتب کی فراہمی نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے بنیادی مقاصد ہیں اور علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی بھی فروغِ تعلیم کے حوالے سے انہی مقاصد کے لیے کام کر رہی ہے۔ این بی ایف کی ریڈرز کلب ممبر شپ اوپن یونیورسٹی کے اساتذہ کرام اور طلبہ کے لیے اوپن ہے۔ این بی ایف کثیر الجہات منصوبوں پر عمل پیرا ہے اور کتب میلوں میں ہماری ہزاروں کتب فروخت ہوئیں۔ہم نے پبلشرز کے استحصال کا راستہ روکا ہے اور ’’امن انقلاب بذریعہ کتاب‘‘ کے تحت کتاب ہر گھر کی دہلیز تک پہنچانے کا اہتمام کیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار نیشنل بُک فاؤنڈیشن کے مینیجنگ ڈائریکٹر ، نامور شاعر و محقق اور درجنوں کتب کے مصنف پروفیسر ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے اکیڈیمک کمپلکس میں شعبہ پاکستانی زبانیں کے زیر اہتمام اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب بہ سلسلہ’’ ایک ملاقات‘‘کے شرکاء سے چیف گیسٹ کی حیثیت سے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اوپن یونیورسٹی میری اپنی یونیورسٹی ہے اور اس سے میرا گہرا تعلق ہے۔ شعبۂ اُردو اور بعد ازاں شعبہ پاکستانی زبانیں کے آغاز سے لے کر ایم فل پی ایچ ڈی کی سطح کے کورسز تک میں مجھے کامیابی ملی۔ انہوں نے این بی ایف میں اپنی تقریباً دوسالہ کار گزاری کا اجمالی جائزہ پیش کرتے ہوئے سالِ رواں میں اسلام آباد ، کوئٹہ ،کراچی اور دیگر شہروں میں قومی سطح کے بُک فیئرز اور وہاں کروڑوں روپے کی کتب کی فروختگی پر طمانیت کا اظہار کیا اور کہا کہ اب این بی ایف کی مطبوعات سے لاکھوں شائقینِ کتب استفادہ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ این بی ایف اور اوپن یونیورسٹی میں اشتراک عمل کے قوی تر امکانات ہیں ۔ قبل ازیں اوپن یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر انعام الحق جاوید بے پناہ تخلیقی صلاحیتوں کے مالک ہیں۔ علم و ادب اور تعلیم کی دنیا میں منفرد مقام رکھتے ہیں۔ اپنی خداداد قابلیت کی وجہ سے یہ مشکل ترین حالات میں بھی کامیابی کی راہ نکال لینے کی بھر پور صلاحیت رکھتے ہیں۔ان کی رہنمائی میں نیشنل بُک فاؤنڈیشن بہت عمدہ اور طلبہ و اساتذہ کے لیے مفید اور سستی کتب شائع کر رہا ہے اور ملک بھر میں کتابوں کے کامیاب میلے منعقد ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر انعام الحق جاوید جہاں بھی رہے انہوں نے ہمیشہ نیا اور بڑا کام کیا اور ہر تجربے میں کامیاب رہے۔تقریب کے اختتام پروائس چانسلر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے چیف گیسٹ ڈاکٹر انعام الحق جاوید کو یونیورسٹی کی طرف سے شیلڈ پیش کی جب کہ ڈاکٹر انعام الحق جاوید نے وی سی ڈاکٹر شاہد صدیقی کو اپنی تازہ کتب پیش کیں۔
تقریب کی نظامت اوپن یونیورسٹی شعبہ پاکستانی زبانیں کے ڈاکٹر عبد الواجد تبسم نے ادا کیے اور ڈاکٹر انعام الحق جاوید کے علمی و ادبی سفر کا تعارف پیش کیا۔ خطاب کرنے والے دیگر دانش وروں میں ڈاکٹر عبداللہ جان عابد اور ڈاکٹر محسنہ نقوی شامل تھیں ۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی زبانوں کی ترویج و ترقی میں ڈاکٹر انعام الحق جاوید کی خدمات ناقابلِ فراموش ہیں۔ان کے ساتھ کام کر کے سیکھنے کے بہت مواقع ملتے ہیں۔