bedilاسلام آباد(3نومبر 2015ء) نیشنل بُک نے امن انقلاب بذریعہ کتاب کے سلوگن کے تحت قارئین کے لیے فارسی شاعری کے تاجور ابوالمعانی مرزا عبدالقادر بیدل کے منتخب کلام کو منثورو منظوم اردو ترجمہ کے ساتھ ’’ بہار ایجادیِ بیدل‘‘ کے نام سے شائع کر دیا ہے۔ تحقیق وترجمہ نامور محقق، شاعر، مترجم اور فارسی زبان و ادب کے سکالر ڈاکٹر سید نعیم حامد علی الحامد کی ہے جو انہوں نے نہایت عرق ریزی کے ساتھ سادہ ، رواں دواں اور سلیس و بامحاورہ زبان میں کی ہے۔147صفحات کی اس کتاب کی قیمت 140روپے ہے جسے ریڈرز کلب کے ممبران 55فی صد ڈسکاؤنٹ پر صرف 63 روپے کے عوض حاصل کر سکتے ہیں۔ نامور شاعر پروفیسر انور مقصود کا دیباچہ بیدل لورز اور شعروادب کے عام قارئین کے لیے نہایت معلومات افزاء خاصے کی چیز ہے ۔پروفیسر انور مسعود نے اسے قابل قدر ترجمہ قرار دیا ہے۔ مترجم نے بیدل کے ایک متنازعہ شعر کے حوالے سے بھی چند صفحات قلم بند کر کے تاریخ و تحقیق کے طلبہ و اساتذہ کے لیے تفہیمِ بیدل کو دلچسپ بنا دیا ہے۔