1428468671-LAbگورنمنٹ بابا فرید میونسپل لائبریری میں ممبران دو سال سے انٹرنیٹ کی سہولت سے محروم ہیں۔

لائبریری انچارج اعجاز احمد نے سجاگ کو بتایا کہ 2013 میں یونیسف کے تعاون سے کمپیوٹر لیب کا افتتاح کیا گیا اور لائبریری ممبران کو فری انٹرنیٹ کی بھی سہولت دی گئی۔

‘انٹرنیٹ کے ماہانہ بل کی ادائیگی کے لیے فنڈز کی عدم دستیابی کی وجہ سے انٹرنیٹ کی سہولت صرف تین ماہ چل سکی اور اب کمپیوٹر لیب ناقابل استعمال ہے۔’

 اعجاز احمد نے بتایا کہ کمپیوٹر لیب لائبریری کو بطور عطیہ ملی جبکہ ضلعی حکومت کے سالانہ بجٹ میں کمپیوٹر لیب شامل نہیں، جس کی وجہ سے ضلعی حکومت اس کے لیے بجٹ مختص نہیں کرتی۔

‘لائبریری کے کل ممبران کی تعداد ایک سو 23 ہے جبکہ لائف ٹائم ممبرشپ فیس پانچ سو پانچ روپے ہے۔’

انہوں نے مزید بتایا کہ لائبریری میں چار ایم بی انٹرنیٹ کنشن تھا،جس کا ماہانہ بل چار ہزار روپے تھا جو کہ بل کی عدم ادائیگی کی وجہ سے منقطع ہو گیا۔

لائبریری میں موجود ایک ممبر محمد شفیع نے سجاگ کو بتایا کہ انٹرنیٹ کی سہولت سے ممبران کی دلچسپی بڑھے گی اور ممبران کی تعداد میں بھی اضافہ ہوگا، ضلعی انتظامیہ کو چاہیے کہ وہ لائبریری میں شہریوں کی کم ہوتی ہوئی دلچسپی کے رجحان کو کم کرنے کے لیے جدید سہولیات فراہم کرے۔

لائبریری انچارج نے ضلعی انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ انٹرنیٹ کی سہولت کو یقینی بنانے کے لیے سالانہ فنڈز مختص کیے جائیں۔

Courtesy: http://pakpattan.sujag.org/